افغان امن عمل میں اب تک کی سب سےبڑی پیش رفت

افغان امن عمل میں اب تک کی سب سےبڑی پیش رفت،،،امریکانے چین اور روس سےبات چیت کےبعد مجموعی امن عمل کے لیے افغانستان سے غیر ملکی فوجوں کے ذمہ دارانہ انخلا پر اتفاق کر لیا۔امریکی محکمہ خارجہ نے مشترکہ اعلامیہ جاری کر دیا جس میں تمام فریقین سے تشدد کے خاتمے کے لیے فوری اقدامات اٹھانے پر زور دیا گیا۔
اعلامیہ کےمطابق واشنگٹن نے ماسکو اجلاس میں چین اور روس سےبات چیت کےدوران غیرملکی فوج کےانخلاء پراتفاق کیا،امریکاکی جانب سے صدرٹرمپ کےخصوصی نمائندہ برائےافغانستان زلمےخلیل زاد نے چینی اورروسی حکام سےبات چیت کی ،افغانستان پر آئندہ سہ فریقی اجلاس بیجنگ میں ہوگا۔
ادھر غیرملکی خبرایجنسی رائٹرز نے دعویٰ کیا ہے کہ امریکی وزیر خارجہ کابل میں موجود آدھے سفارتی عملے کو ستمبر تک واپس امریکا بلوالیں گے۔ امریکی سفارتخانے میں 1500 افراد پر مشتمل عملہ موجود ہے۔
پلان کے تحت اگلے برس امریکا نے سفارتی عملے کی واپسی کا فیصلہ فوجی انخلاء کے فیصلے کے بعد کرنا تھا۔ 4 برس قبل امریکا نے 8 سو ملین ڈالر کی خطیر رقم خرچ کر کے سفارتخانے کی توسیع کی تھی۔ غیرملکی فوجیوں کی واپسی امن مذاکرات میں طالبان کااولین مطالبہ تھا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.