پاکستان ٹیکس کلیکشن اورایکسپورٹ بڑھانےمیں ناکام رہا،مشیرخزانہ عبدالحفیظ شیخ

0
مشیرخزانہ عبدالحفیظ شیخ کا کہنا ہےکہ ریفنڈز نظام کےمسائل کومکمل طورپرختم کر رہے ہیں،پچھلے سال ملکی تاریخ میں 240 ارب کے ریفنڈز دیئے گئے جبکہ اگلے ہفتے پانچ کروڑ روپے تک کے ریفنڈز دیدیں گے، ایف بی آرہرماہ ریفنڈز کیلئے 10 ارب روپے علیحدہ سے رکھے گا۔ ریفنڈز معاملات میں ایف بی آر کے بجائے نجی سیکٹر کو رکھا ہے۔ ریفنڈز کے عمل کیلئے کمیٹی کا سربراہ نجی سیکٹرسےہوگا۔عبدالحفیظ شیخ کا مزید کہنا تھاکہ بجلی سیکٹر میں اصلاحات وزیراعظم کی ترجیح نمبرایک ہے،وزیراعظم نے انرجی سیکٹرمیں پانچ بڑے فیصلےکیےہیں،جس پرعملدرآمد ہفتوں میں نظر آئےگا،بجلی کے بلوں کی کلیکشن کو بہتر کرنے اور بجلی تقسیم کے نقصانات کوکم کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے۔ ہم نے آئی پی پیز سے مذاکرات کو چند دنوں میں مکمل کرنا، متبادل ذرائع سے سستی بجلی کی پیداوار کو فروغ دینا اور بجلی تقسیم کار کمپنیوں میں پرائیوٹ سیکٹرکوشامل کرنا ہے، ان کا مزید کہنا تھا کہ آئی ایم ایف مذاکرات میں بجلی سیکٹراصلاح شامل ہے، اس میں کوئی کوتاہی نہیں ہوسکتیمشیرخزانہ کا کہنا تھا کہ سٹیل ملزکوغیرملکی سرمایہ کاری کے ذریعے چلائیں گے،سٹیل ملز نئےانداز میں چلانےکیلئےطریقہ کارچل رہا ہے،پرائیویٹائزیشن کمیشن کو قوانین پر محتاط انداز میں چلنا ہے۔ بجلی سیکٹر کے بعد سرکاری کارپوریشنز امور سدھاریں گے۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: