عراق میں بدامنی عروج کو پہنچ گئی

0
عراق میں سیکیورٹی فورسز کی جانب سے مظاہرین پر طاقت کے استعمال کے بعد بدامنی میں مزید اضافہ ہوا ہے اور احتجاج کا سلسلہ تھمنے کا نام نہیں لے رہا۔جنوبی عراق میں ہونے والے مظاہروں اور سیکیورٹی فورسز کے ساتھ تازہ جھڑپوں میں مزید 6 مظاہرین ہلاک اور درجنوں زخمی ہوئے ہیں۔ناصریہ میں سیکیورٹی فورسزکی فائرنگ سے 3 مظاہرین ہلاک اور 47 زخمی ہوئے جب کہ بصرہ کے جنوبی علاقے ام قصر میں سیکیورٹی فورسز سے جھڑپوں میں 3 مظاہرین ہلاک اور 50 سے زائد زخمی ہوئے۔سیکیورٹی فورسز کے کریک ڈاؤن کے باعث تا حال 350 افراد مارے جاچکے ہیں۔عراق میں مظاہرین معاشی بدحالی، بے ضابطگیوں اور ناقص سہولیات کے خلاف یکم اکتوبر سے مظاہرے کررہے ہیں۔ دوسری جانب عراقی وزیراعظم عادل عبدالمہدی کا کہنا ہے کہ گزشتہ سال ہی اقتدار سنبھالا ہے نے متعدد اصلاحات اور پیکجز کا اعلان کیا تھا تاہم مظاہروں کی شدت میں کمی نہیں آسکی

جواب دیجئے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: