تھرپارکر میں موت کا رقص جاری

ضلع تھرپار میں ایک عرصے سے بھوک اور بدحالی ڈیرے ڈالے ہوئےہے،،،یہاں کے باسیوں کو دو وقت کا کھانا بھی نصیب نہیں۔ بڑوں کے ساتھ بچے بھی غذائی قلت کا شکار ہیں جس کے باعث بچوں کی اموات روز کا معمول بن چکا ہے۔ سول ہسپتال مٹھی میں غذائی قلت کے باعث مزید دو بچے انتقال کرگئے جس کے بعد رواں ماہ مرنے والے بچوں کی تعداد بائیس ہوگئی جبکہ رواں سال نواسی بچے موت کے منہ میں جاچکے ہیں
دوسری جانب تھرپارکر کے قدرتی حسن کی علامت مور اور دوسرے پرندے بھی قحط سالی کا شکار ہونے لگے ہیں ،،،۔جہاں انسان کے لئے اناج نہیں وہیں بے زبان پرندے اور جانوربھی بھوک اور پانی کو ترس رہے ہیں ،،،نگرپارکر، اسلام کوٹ اور ڈیپلو میں دو ماہ کے دوران چھ سو سے زائد مور مرچکے ہیں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.