نائن الیون:وہ تاریخ جس نے دنیا کی تاریخ بدل دی

نائن الیون، وہ تاریخ جس نے دنیا کی تاریخ بدل دی۔ دہشت گردوں نے امریکی ترقی کی نشانی ورلڈ ٹریڈ سینٹر کو حملوں کے لیے منتخب کیا۔ نیویارک کے ماتھے کا جھومر ورلڈ ٹریڈ سینٹر لمحوں میں ملبے کا ڈھیر بن گیا۔اس کارروائی میں امریکی ایئرلائن کے 2 مسافر طیارے 18 منٹ کے وقفے سے ورلڈ ٹریڈ سینٹر کی دونوں عمارتوں سے ٹکرائے گئے۔
ورلڈ ٹریڈ سینٹر کے واقعے کے ٹھیک ایک گھنٹے بعد ایک اور اغوا شدہ مسافر جہاز بوئنگ 757 بھی امریکی محکہ دفاع کے ہیڈ کوارٹر پینٹا گون پرگرایا گیا جس سے پینٹاگون جزوی طور پر تباہ ہو گیا۔ آدھے گھنٹے بعد ایک اور جہاز کے متعلق خبر آئی کہ جسے اغوا کر کے وائٹ ہاؤس کی طرف لے جایا جا رہا تھا یہ بھی بوئنگ 757 تھا جسے پنسلوانیا کے مقام پر لڑاکا طیاروں کے ذریعے مار گرایا گیا ۔دہشت گردی کے اس واقعے میں 3 ہزار افراد ہلاک جب کہ 10 ہزار سے زائد زخمی ہوئے لیکن اس کے ساتھ ہی امریکا اور اس کے حامیوں کو مالی بحران کا شکا رہونا پڑا ۔ حملوں کی اطلاع عام ہوتے ہی عالمی منڈی میں تیل اورسونے کی قیمتوں میں فوری اضافہ ہوگیا، یورو کے مقابلے میں ڈالر کر نقصان پہنچا ۔ لندن کی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتيں 26 ڈالر سے بڑھ کر 30 ڈالر تک جا پہنچیں جب کہ نیو یارک میں تیل کی مارکیٹ ہی بند ہوگئی۔اسی طرح سونے کی قیمت میں لگ بھگ 19 ڈالر فی اونس کا اضافہ ہو گیا۔دہشت گردی کےان واقعات کے بعد عالمی سیاسی منظر نامہ تبدیل ہوگیا،،،اس وقت کے امریکی صدر جارج بش نے قوم سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گرد ہماری عمارتوں کی بنیادیں تو ہلاسکتے ہیں لیکن وہ متحدہ ریاست ہائے امریکا کی بنیاد کو ہاتھ بھی نہیں لگاسکیں گے۔چند گھنٹوں میں ہی انہوں نے دہشت گردی کے خلاف جنگ کا عندیہ دیا جس کا آغاز 7 اکتوبر کو افغانستان میں آپریشن اینڈیورنگ فریڈم کےنام سے کیا گیا۔اور یہ جنگ18سال بعد آج بھی جاری ہے

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.