10برس کےدوران پاکستان اوربھارت کے ایٹمی بموں کی تعداد میں دوگنا اضافہ

سویڈین میں قائم ادارے اسٹاک ہوم انٹرنیشنل پیس ریسرچ انسٹی ٹیوٹ نے اپنی ایک حالیہ رپورٹ میں کہا ہے کہ دنیا میں جوہری ہتھیاروں کی مجموعی تعداد میں کمی آئی ہے لیکن جنوبی ایشیائی خطے میں اس میں اضافہ ہو ا ہے۔رپورٹ کے مطابق آج سے 10 برس قبل بھارت کے پاس 60 سے 70 جوہری بم موجودتھے جبکہ پاکستان کے پاس اس وقت تقریباً 60 بم تھے لیکن 2019 میں دونوں ملکوں کے پاس نیوکلیائی بموں کی تعداد ڈبل ہوگئی ہے۔
MONTAGE
سوئیڈش انسٹیٹوٹ کے تخفیف اسلحہ پروگرام کے سربراہ شینن کائل نے برطانوی نشریاتی ادارے کوبتایا کہ بھارت اور پاکستان کے درمیان گزشتہ چار پانچ ماہ سے سخت کشیدگی پائی جاتی ہے اور اس سال فروری میں دونوں ملک جنگ کے کنارے پہنچ گئےتھے،ایسے وقت میں جوہری بموں کی تیاری خطے کی صورتحال کی عکاس ہے۔
MONTAGE
اسٹاک ہوم انٹرنیشنل پیس ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کی رپورٹ کےمطابق پچھلے چند برسوں میں پاکستان نے بھارت سے زیادہ نیوکلیائی بم تیار کئے ہیں۔
Back

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.