“یوٹرن سرکار”بسنت کی اجازت کے بیان پرقائم رہ پائے گی؟

لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس امین الدین خان نے بسنت کی اجازت دینے پرتوہین عدالت کےحوالےسےدائر درخواست کی سماعت کی۔ درخواست گزارنےموقف اختیار کیاکہ سپریم کورٹ فیصلےکےباوجود پنجاب حکومت کی جانب سےبسنت منانے کا اعلان کیا گیا اورپتنگ بازی روکنے کیلئے اقدامات بھی نہیں کئے گئے جبکہ عدالتی حکم پرعملدرآمد نہ کرناتوہین عدالت ہے۔جسٹس امین الدین خان نےوزیر اطلاعات پنجاب، چیف سیکرٹری، آئی جی و دیگر سے جواب طلب کرتے ہوئے سماعت ملتوی کردی ہے۔

صوبائی وزیراطلاعات نے رواں ماہ کی 18 تاریخ کوایک پریس کانفرنس کے دوران ماہ فروری کے دوسرے ہفتے میں بسنت منانے کا اعلان کیا تھا ۔ جس پر ایک شہری کی جانب سے اس اقدام کو لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کردیا گیا جبکہ مسلم لیگ ن کی جانب سے بسنت کی اجازت دینے کےخلاف پنجاب اسمبلی میں قراردادجمع کرائی گئی، جس میں موقف اختیار کیا گیاکہ پنجاب حکومت کابسنت منانے کا اعلان غیر دانشمندانہ فیصلہ ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.