یورپ میں مذہبی انتہاپسندی عروج پرپہنچ گئی

دوسروں کو اقلیتوں کے حقوق کا سبق دینے والے یورپی ممالک میں مسلمانوں پر زندگی تنگ کی جارہی ہے،،،اس کی تازہ بدترین مثال جرمنی میں مسجد پرہونے والے حملے کی صورت میں دیکھنے کو ملی۔نامعلوم شرپسندوں نے مونسٹر کے قریب منڈن نامی قصبے میں واقع ایک مسجد پر حملہ کر دیا،شرپسندوں نے مسجد کی بے حرمتی کرتے ہوئے اسےنقصان پہنچایا،وہاں غلاظت پھیلائی اور قرآن پاک کے نسخوں کو شہید کردیا۔جرمن میڈیا کے مطابق مجرمانہ اور شرپسندانہ ذہنیت کے حامل افراد نے ترک اسلامی انجمن کے زیر انتظام جامع مسجد منڈن باروس پر حملہ کیا،واقعہ پرمسلم کمیونٹی نے شدید احتجاج کیا اورپولیس کو نامعلوم شرپسندوں کیخلاف کارروائی کیلئے تحریری درخواست دی جس کے بعد پولیس نے تفتیش شروع کردیمغربی ممالک میں گزشتہ کئی ماہ سے مساجد، مسلمانوں اور ان کی املاک کو نشانہ بنانے کےواقعات میں تیزی دیکھنے میں آئی ہے۔نسل پرستی اور مذہبی منافرت پر یقین رکھنے والوں کے خلاف مغربی ممالک کی پولیس اور شہری انتظامیہ نے خاطر خواہ اقدامات نہیں کئے جس سے ان واقعات کو بڑھاوا مل رہاہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.