ہمسایہ ممالک میں کرونا کا پھیلاؤ،پاکستان بچاؤ کے لیے ہائی الرٹ

2 ہمسایہ ممالک میں کرونا کا پھیلاؤ کے بعد پاکستان بچاؤ کے لیے ہائی الرٹ ہو گیا،،ملک میں آنے والےمسافروں کے لیے ہیلتھ ڈکلیریشن فارم پر کرنا لازمی قرار دے دیا گیا ہے ،جبکہ چین،ایران اور خلیجی ممالک کے مسافروں سے15 روزہ سفری ریکارڈ لینے کا پلان بھی تیار کر لیا گیا ہے۔
وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا کا کہنا ہے کہ چاروں ہمسایہ ممالک میں کرونا وائرس سے پیدا شدہ صورت حال پر نظر ہے،،تاہم پاکستان میں اب تک کرونا وائرس کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ پورے ملک میں صحت کی سہولتوں سے مطمئن نہیں ہوں
دوسری جانب ترجمان چینی وزارت خارجہ نے پاکستان کے اقدام کی تعریف کرتے ہوئے کہا ہے کہ کرونا وائرس کے بعد پاکستان پہلا ملک تھا جس نے ہمارا ساتھ دیا۔ پاکستانی پارلیمان نے چینی حکومت کی کوششوں کی حمایت میں قراردادیں بھی پاس کیں۔ حقائق نے ایک بار پھر ثابت کر دیا ہے کہ پاکستان اور چین سچے دوست ہیں۔
کروناوائرس کے خوف نے عالمی معیشت کو اپنی گرفت میں لے لیا ہے جس سےیورپی اسٹاک مارکیٹس لڑکھڑاگئی ہیں ‘سب سے زیادہ گراوٹ اطالوی اسٹاک مارکیٹ میں دیکھنے میں آئی ہے۔ جبکہ پاکستان سٹاک ایکسچینج میں 1105پوائنٹس کی کمی دیکھنے میں آئی ہے،جس کے باعث سرمایہ کاروں کو 175 ارب روپے کا نقصان اٹھاناپڑا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: