ہالی ووڈ نےٹرمپ کی نسل پرست پالیسیاں بے نقاب کرنے کا فیصلہ

صدر ٹرمپ کے تعصبانہ ، نسل پرست تبصروں اور پالیسیوں کے حوالے سے بنائی گئی ہالی ووڈ فلم ” دی ہنٹ ” 13 فروری کو ریلیز ہو گی ۔ فلم ایسے امریکی معاشرے کی عکاسی کرتی ہے جس میں اشرافیہ عام امریکی شہری کو کھیل سمجھتے ہوئے ان کا شکار کرتی ہے۔
گزشتہ سال ستمبر میں فلم کی ریلیز کا اعلان کیا گیا تھا لیکن برسر اقتدار ریپبلکن جماعت کی وجہ سے تنقید کے بعد فلم کی ریلیز موخر کرنا پڑی ۔ ریپبلکن جماعت نے فلم کو ’نسل پرست‘ قرار دیا ہے جبکہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ٹویٹ میں تنقید کرتے ہوئے کہا تھا کہ ہالی ووڈ خود ہی فساد پیدا کرتا ہے اور پھر دوسروں کو اس کا ذمہ دار ٹھہراتا ہے۔
یونیورسل پکچرز نے یہ فیصلہ اوہائیو، ٹیکساس اور کیلوفورنیا میں ہونے والے حالیہ فائرنگ کے واقعات کے بعد کیا ہے جبکہ فلم کے پروڈیوسر جیسن بلم کا کہنا ہے کہ فلم بناتے ہوئے کسی کی بھی حمایت نہیں کی گئی بلکہ یہ ایک طنزیہ فلم ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: