ہاتھ میں کھوئے بیٹوں کی تصویر ہے،،ظلم کی زد یہ گلزار کشمیر ہے

ہاتھ میں کھوئے بیٹوں کی تصویر ہے،،ظلم کی زد یہ گلزار کشمیر ہے۔۔۔۔
جنت نظیر وادی مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی فوج کی جانب سے دہشتگردی،ظلم،قتل و غارت کا سلسلہ جاری ہے۔مسلمانوں کے بیہمانہ قتل میں ڈوبے سال دو ہزار اٹھارہ میں بھارتی فوج نے تین سو پینسٹھ دنوں میں تین سو پچپن کشمیریوں کو شہید کر دیا گیا۔
شہید ہونے والوں میں دس سالہ بچہ مشرف فیاض،حاملہ خاتون فردوس جبکہ سینئر صحافی شجاعت بخاری سے ان کے دفتر کے سامنے موت کے گھاٹ اتارا گیا۔قابض دہشتگرد بھارتی فوج کی جانب سے پچانوے نام نہاد سرچ آپریشن کئے گئے جن میں ایک سو بیس گھروں کو تباہ کر دیا گیا۔
کب تلک اجڑیں گے آخر ماﺅں بہنوں کے سہاگ،،چاند چہرے یوں شب وحشت پہ وارے جائیں گے۔۔۔
مقبوضہ کشمیر میں نومبر سب سے زیادہ خونی مہینہ رہا جس میں49 افراد سے زندگی کا حق چھین لیا گیا۔یکم اپریل کو بھی بھارتی درندوں نے اپریل فول مناتے ہوئے بیس کشمیری مسلمان شہید جبکہ دو سو سے زائد زخمی کردیئے۔۔۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.