کھانا زہر بن گیا

کراچی کے ہوٹلوں میں مضر صحت اور زہریلا کھانا پیش کیا جانے لگا اور کوئٹہ سے آنے والے متاثرہ خاندان نے صدر کراچی میں واقع ایک ہوٹل سے کھانا کھایا جس کے بعد 28 سالہ خاتون اور 5 بچوں کی حالت بگڑ گئی جس پر انہیں نجی ہسپتال منتقل کردیا گیا ۔ہسپتال انتظامیہ کے مطابق بچوں کو جب ہسپتال لایا گیا تو ان کا انتقال ہو چکا تھا جبکہ ان کی والدہ بینا سمیت 2 خواتین کی حالت تشویشناک تھی ۔ بعدازاں بچوں کی ماں بھی دم توڑ گئی ہسپتال انتظامیہ کے مطابق 28 سالہ ماں بینا کے علاوہ جاں بحق ہونے والے بچوں میں ڈیڑھ سالہ عبد العلیٰ، 4 سالہ عزیز فیصل،6 سالہ عالیہ،7سالہ توحید اور 9 سالہ سلویٰ شامل ہیں۔دوسری جانب وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے کراچی فوڈاتھارٹی سے رپورٹ طلب کرلی اور کمشنر سندھ کو واقعہ کی تحقیقات خود اپنی نگرانی میں کرانے کی ہدایت کی ہے اس کے علاوہ مراد علی شاہ نے متاثرہ خاندان کو ہر طرح کے تعاون کی یقین دہانی بھی کرائی ہے

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.