کشمیریوں کی آنکھ میں آنسو،پیروں میں زنجیر،رہائی کیلئے دنیا پر نظر

0

مقبوضہ کشمیر کے کشمیری بہن بھائیوں کے پیروں میں قید و بند کی زنجیریں ایک سو باون روز بھی نہ کھل سکیں،،چپے چپے پر قابض فوج تعینات ہے، بد ترین کرفیو اور لاک ڈاون کے باعث کشمیریوں کو خوراک اور ادویات کی شدید قلت کا سامنا ہے دوسری جانب سکول، کالجز، دفاتر اور تجارتی مراکز بھی تا حال بند ہیں،، مواصلاتی رابطے بھی بد دستور منقطع ہیں۔
مقبوضہ کشمیر میں بنیادی انسانی حقوق کی پامالی عروج پر ہے اور قابض فورسز گھر گھر چھاپے مارکر بے گناہ کشمیریوں کو گرفتار کر رہی ہے۔5 اگست سے جاری کرفیو اور پابندیوں کے دوران بھارتی فوج خواتین سمیت درجنوں کشمیریوں کو شہید کرچکی ہے۔ قابض،ظالم فوج کے ساتھ جھڑپوں میں متعدد کشمیری زخمی ہوئے،سینکڑوں کو گرفتار کیا جا چکا ہے۔
80 لاکھ کشمیری بھارتی جبر سے نجات کیلئے دنیا کی طرف دیکھ رہے ہیں۔بہادر کشمیریوں کی بڑی تعداد تمام تر پابندیوں کے باوجود آئے روز اپنے حقوق کے لیے قابض فوج کے خلاف مظاہرے کر رہی ہے۔۔ تاہم انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں کی مجرمانہ خاموشی تا حال برقرار ہے۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: