!!!کرپشن کیسز،رہبرکمیٹی کےسربراہ اکرم درانی سےتفتیش

اپوزیشن مذاکراتی کمیٹی کےسربراہ اکرم درانی نیب راولپنڈی کےدفتر میں پیش ہوئے،نیب حکام کےمطابق اکرم درانی سے تین کرپشن کیسز اثاثہ جات،غیرقانونی بھرتیوں اور پلاٹس کی الاٹمنٹ پر تفتیش ہوئی،،،تفتیش کے دوران اکرم خان درانی سے نیب نے سوالات کئے کہ کیاآپ نےحلقےکے70 لوگوں کوجعلی ڈومیسائل پروزارت میں بھرتی کیا،،،وزارت ہاؤسنگ کے افسران نے جعلی ڈومیسائل پر بھرتیاں کیں؟ کیابھرتی ہونے والے لوگ آپ کے حلقے سے تھے؟
اپوزیشن مذاکراتی کمیٹی کےسربراہ اکرم درانی نے جواب دیا کہ مولانا مارچ کے دھرنے کی وجہ سے نشانہ بنایا جارہا ہے،وزارت میں بھرتیوں سے براہ راست تعلق نہیں،وزارت ہاؤسنگ میں خالی اسامیوں پرمیرٹ میں بھرتیاں کی گئیں۔
نیب راولپنڈی نےرہبرکمیٹی کےسربراہ اکرم درانی سےتفتیش مکمل کرکے انھیں جانے کی اجازت دے دی،،،دو روز قبل اسلام آباد ہائی کورٹ نے اکرم درانی کی ضمانت میں 21 نومبر تک توسیع کرتے ہوئے نیب کو جواب جمع کرانے کا کم دیا تھا۔جبکہ آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں گرفتاری سے بچنے کے لیے جمیعت علماء اسلام ف کے رہنما اور سابق وزیر اکرم درانی کے بیٹے اور داماد نے بھی ضمانت حاصل کر رکھی ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.