کراچی میں سٹریٹ کرائم کا جن بے قابو

شہر قائد میں سٹریٹ کرائمز ہیں کہ تھمنے کا نام نہیں لے رہے اور کراچی کے شہری چوروں کے رحم و کرم پر،،،آئے دن چوری کی متعدد وارداتیں سامنے آنے لگیں،ماہ رمضان کے صرف 13 دنوں میں ہی ڈکیتی مزاحمت پر ایک شخس جاں بحق اور 16زخمی ہوگئے،جبکہ ڈکیتی کی وارداتوں میں 502 موبائلز،14موٹرسائیکلز اور 2 گاڑیاں گن پوائنٹ پر جبکہ 400 سے زائد موٹرسائیکلز اور 19 گاڑیاں چوری ہوئیں،نقدی چھیننے کی 21وارداتیں ہوئیں،،شہری لاکھوں روپے نقدی سے محروم ہوئے
دوسری جانب موٹرسائیکل چوری اور دکاندار سے ڈکیتی کی سی سی ٹی وی فوٹیج بھی سامنے آ گئیں،،،کراچی والے لٹیروں سے کیسے پیچھا چھڑائیں؟نارتھ ناظم آباد کے ایل بلاک میں 2 ڈاکو دکاندار سے لوٹ مار کر رہے تھے کہ دکان کے سامنے گھر سے شہری نے ویڈیو بنا لی،ایک ڈاکو چہرے ہر ماسک پہنا ہوا تھا،ڈاکو دکاندار سے موبائل اور 50ہزار نقدی چھین کر فرار ہوگئےشہریوں کو بھی تھوڑا سا احتیاط برتنی چاہیے اور اپنی موٹرسائیکلز کے لاک لگانا نہ بھولیں،چور دن دیہاڑے بھی کام دکھا جاتے ہیں،فیڈرل بی ایریا بلاک سیون میں اکیلا چور چلتا ہوا آیا اور بائیک کو بغیر سٹارٹ کئے ہوئے پاؤں کے بل لے گیا،اور دیکھتے ہی دیکھتے غائب ہوگیا،اب سوال یہ ہے کہ قانون نافذ کرنیوالے ادارے کیا کر رہے ہیں؟شہری اپنے مال کو کس طرح محفوظ بنائیں؟

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.