کبھی "زیرو” تو کبھی ٹھہرے میدان کے "ہیرو”

0
لاہور کے قذافی اسٹیڈیم میں کھیلے گئے میچ میں لاہور قلندرز کے کپتان سہیل اختر نے ٹاس جیت کر پہلے گلیڈی ایٹرز کو بیٹنگ کی دعوت دی۔ تاہم گلیڈی ایٹرز کی اننگز کا آغاز ہی تباہ کن انداز سے ہوا اور شین واٹسن پہلے ہی اوور میں بغیر کوئی رن بنائے شاہین شاہ آفریدی کی گیند پر پویلین لوٹ گئے۔
سکور 13 تک پہنچا ہی تھا کہ شاہین نے اپنی ٹیم کو ایک اور کامیابی دلاتے ہوئے احمد شہزاد کی اننگز کا خاتمہ کردیا۔اس کے بعد سمیت پٹیل نے دو ہی اوورز میں تباہ کن باؤلنگ سے میچ کا پانسہ پلٹ دیا اورپہلے سرفراز احمد کو آؤٹ کیا اور پھر اگلے اوور میں جیسن روئے، اعظم خان اور بین کٹنگ کو پویلین رخصت کیا
سہیل خان اور محمد نواز نے اس موقع پر سنبھل کر بیٹنگ کرتے ہوئے 29رنز کی شراکت قائم کرکے ٹیم کی نصف سنچری مکمل کرائی۔تاہم نواز 10رنز بنانے کے بعد راجا فرزان کو وکٹ دے بیٹھےاس کے بعد فواد احمد بھی صرف 4رنز ہی بنا سکے۔سہیل خان 32رنز کی مزاحمتی کھیل کردلبر حسین کا نشانہ بنے۔کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے مقررہ اوورز میں 9وکٹوں کے نقصان پر 98رنز بنائے،
ہدف کے تعاقب میں قلندرز کے اوپنرز نے اپنی ٹیم کو 27رنز کا آغاز فراہم کیا جس کے بعد فخر زمان20 اور کپتان سہیل اختر 5 رنز بنانے کے بعد پویلین لوٹ گئے۔32رنز پر دو وکٹیں گرنے کے بعد محمد حفیظ اور بین ڈنک کی جوڑی نے میدان سنبھالا اور مزید کسی نقصان کے بغیر ہی اپنی ٹیم کو 49گیندوں قبل ہی فتح سے ہمکنار کرا دیا۔محمد حفیظ 39 اور ڈنک 30رنز کے ساتھ ناقابل شکست رہے۔سمیت پٹیل کو تباہ کن باؤلنگ پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: