چین سےتجارتی واقتصادی تعاون اورسی پیک پربات چیت،وزیرخارجہ

وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نےوزیراعظم عمران خان کے دورہ چین پرگفتگو کرتےہوئے کہا 16 اگست کو ہم مشترکہ حکمت عملی سے آگے بڑھےتھے،جنیواانسانی حقوق کونسل اجلاس بھی مشترکہ حکمت عملی تھی ،یواین جنرل اسمبلی میں بھی مقبوضہ کشمیر پراپنا نقطہ پیش کیا۔وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ چینی سٹیٹ قونصلراوروزیر خارجہ نے کشمیر پرتشویش کا اظہار کیا، جس سے چین کی پوزیشن واضح ہے چین نے ہماری تاریخی پوزیشن کو اپنایا ہے۔
شاہ محمود قریشی نے کہا صدر شی مختصر غیر رسمی دورے پر بھارت جا رہے ہیں، ان کی دورے سے پہلے خواہش تھی ایک دوسرے کو اعتماد میں لیں،چینی صدر شی جن پنگ کو ہم نے بھی اعتماد میں لیا ، چینی صدر کا دورہ مکمل ہونے پر رابطہ ہو گا وہ ہمیں باخبر رکھیں گے۔ان کا کہنا تھا کہ چین اور پاکستان ہر موڑ پر ایک دوسرے کو اعتماد میں لیتے ہیں،
وزیرخارجہ نےمزید کہا کہ ہماری چین کےوزیر اعظم کے ساتھ دو ملاقاتیں ہوئی ہیں، چینی وزیراعظم سےوفود کی سطح پر بھی مذاکرات ہوئے ،،جس میں تجارتی، اقتصادی تعاون کے فروغ اور سی پیک پرتفصیلی گفتگو کی گئی،ان کا کہنا تھا کہ چینی وزیراعظم سےدو طرفہ اقتصادی تعاون کوآگے لے کر چلنے پر تفصیلی گفتگو ہوئی جبکہ بہت سی مفاہمتی یادداشتوں پردستخط بھی کیے گئے

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.