چوہدری شوگر ملز کیس کی سماعت

شریف خاندان کی مشکلات تھم نہ سکیں،مریم نواز کو چوہدری شوگر ملز کیس میں آج احتساب عدالت پیش کیا گیا،کیس کی سماعت احتساب عدالت کے جج امیر محمد خان نے کی ،نیب پراسیکیوٹر نے عدالت میں دلائل دیتے ہوئے کہا، چوہدری شوگر ملز لگانے کے لئے شریف فیملی نے مختلف کمپنیوں سے قرضہ لیا، ان تمام کمپنیوں سے ریکارڈ طلب کیا گیا ہے۔ تفتشی افسر نے مزید کہا کہ مریم نواز اور یوسف عباس سے تفتش کے دوران تمام سرمایہ کاری سے متعلق پوچھا گیا لیکن انہوں نے جواب نہیں دیا اس لئے تفتیش کے لئے مزید جسمانی ریمانڈ دیا جائے
مریم نواز نے نیب کی تفتشی رپورٹ کو مسترد کرتے ہوئےکہا کہ نیب کی تفتشی ٹیم نےکرپشن سے متعلق نہیں بلکہ سیاست سےمتعلق سوالات کئے،،،،پوچھا گیا کہ جائیداد آپ کو کیوں دی گئی؟باپ دادا کی جائیداد بچوں کو منتقل کی جاتی ہے ہمسائیوں کو نہیں
عدالت نے نیب کی استدعا منظور کرتے ہوئے نیب کے ریمانڈ میں 7 دن کی توسیع کرتے ہوئے25 ستمبر کو دوبارہ عدالت مین پیش ہونے کا حکم دے دیا

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.