چودھری شوگرملزکیس کی سماعت 22نومبرتک ملتوی

احتساب عدالت لاہورمیں چودھری شوگر مل کیس کی سماعت ہوئی ،احتساب عدالت کے جج امیر محمد خان نے کیس کی سماعت کی مسلم لیگ ن کے نائب صدر مریم نواز عدالت میں پیش ہوئیں جبکہ یوسف عباس کو نیب حکام نے احتساب عدالت میں پیش کیا ۔
وکیل صفائی امجد پرویز نے عدالت کو بتایا کہ نواز شریف علالت کے باعث احتساب عدالت میں پیش نہیں ہو سکتے،ان کی طبیعت بہت خراب ہے اور گھر میں ہی آئی سی یو بنایا گیا ہے،،اس موقع پر وکیل صفائی نے نواز شریف کی میڈکل رپورٹ جمع کرائی،عدالت سے وکیل صفائی سے استفسار کیا کہ مریم نوازکے ضمانتی مچلکے کہاں ہیں؟وکیل نے عدالت کو بتایا کہ ضمانتی مچلکے جمع کرادیئےگئے ہیں اور اصل کاپی کورٹ میں ہے،عدالت نے نیب پراسیکیوٹر سے استفسار کیا کہ کیس کا ریفرنس کب دائر کیا جائے گا ؟پراسیکیوٹرنےعدالت کوبتایا کہ ریفرنس جلد ہی دائرکردیاجائےگا۔
عدالت نے مریم نواز سے استفسار کیا آپ ضمانت دے رہی ہیں کہ عدالت میں پیش ہونگی جس پر مریم نے کہا حکم کی تعمیل کروں گی، آج بھی میاں صاحب کو چھوڑ کر آنا مشکل تھا لیکن عدالت کا احترام کرتی ہوں۔سماعت کے دوران ضمانتی مچلکوں پر دستخط کرانے پر مریم نواز نےعدالتی عملےسےاستفسار کیا کہ یہ دستخط کیوں کرائے جا رہے ہیں،جس پرفاضل جج نے کہا کہ یہ اس لیے تاکہ اگر آپ پیش نہ ہوں توضامن کوبلایاجاسکے۔
اس موقع پرنیب حکام نے نواز شریف اور مریم نواز کی حاضری سے استثنیٰ کی مخالفت کی تاہم عدالت نے سابق وزیراعظم کی عدالت حاضری سےاستثنیٰ کی درخواست منظورکرتے ہوئےنوازشریف،مریم نواز اوریوسف عباس کو 22نومبر کو عدالت پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.