پیوٹن مزید 2 بار صدر بن سکیں گے

0

روس کے ایوان زیریں، ڈوما نے ایسے قانون کی منظوری دی ہے جس کے تحت ولادیمیر پیوٹن مزید دو بار صدر بن سکیں گے۔ یہ ترمیم حکمران پارٹی کی خاتون رکن پارلیمان ویلنٹینا ٹریشکووا نے پیش کی جو پیوٹن پر سے اس پابندی کا خاتمہ کرتی ہے جس کے مطابق وہ 2024ء کے بعد صدر نہیں رہ سکتے۔
دوسری جانب روسی صدر ولادی میر پیوٹن خود پارلیمان میں آئے اور قانون سازوں سے خطاب کیا،انہوں نے اپنے خطاب میں کہا کہ وہ چاہتے ہیں کہ روس کا صدر بدلتا رہے اور دو بار سے زیادہ کسی کو موقع نہ دیا جائے لیکن اس وقت ملک کو اندرونی اور بیرونی چیلنجوں کا سامنا ہے۔
پیوٹن کے خطاب کے چند منٹ بعد رائے شماری ہوئی اور نئی ترامیم کو منظور کر لیا گیا ، اب اسے آئینی عدالت میں پیش کیا جائے گا جس کے بعد 22 اپریل کو عوامی ریفرنڈم ہو گا جس میں کامیابی کے بعد ولادی میر پیوٹن مزید 12 سال کیلئے عہدہ صدارت پر رہ سکیں گے۔
سڑسٹھ سالہ پیوٹن 2000 سے اقتدار میں ہیں اور انکی 6 سالہ صدارت کی یہ چوتھی مدت ہے۔ اس دوران وہ چار سالہ مدت کے لیے وزیراعظم بھی بنے تھے۔ اگر وہ مزید دو بار صدر منتخب ہوئے تو ان کے اقتدار کی مدت 32 سال ہوجائے گی جو سٹالن کے دور سے بھی زیادہ عرصہ ہوگا۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: