پاکستان پر بےبنیاد الزامات کا بھارتی پروپیگنڈا ناکام

یہاں پلوامہ حملے سے متعلق بہت سے خبریں زیرگردش ہیں
انڈین میڈیا اور انڈین حکومت
کہہ رہی ہے کہ یہ ایک دہشتگردانہ کارروائی ہے
دہشتگردانہ کارروائی انڈیا کے خلاف
لیکن پلوامہ حملہ دہشتگردانہ کارروائی نہیں ہے
یہ ایک جائز فوجی ہدف تھا
کیوں؟
کیونکہ عالمی قانون کے مطابق
اگر کہیں کوئی جگہ کے حوالے سے تنازع چل رہا ہو کشمیر کی طرح
جوکہ انڈین حکومت کی جانب سے متنازع علاقہ قراردیاگیا ہو
ایک طرح یہاں انڈین فوج ہے
دوسری جانب یہاں کشمیر کی آزادی کے متوالے اور عسکریت پسند ہیں
تو جب عسکریت پسند انڈین فوج کو نشانہ بناتے ہیں
تو یہ ایک آسان فوجی ہدف ہے عالمی قوانین کے مطابق
جوکہ جنیواکنونشن میں اگست 1949 میں درج ہے
کشمیری آزادی کے متوالوں نےرہائشی آبادی پر حملہ نہیں کیا
انہوں نے کسی ہسپتال پر حملہ نہیں کیا
انہوں نے کسی سکول پر حملہ نہیں کیا
انہوں نے حتیٰ کہ کسی شاپنگ سنٹر پرحملہ نہیں کیا
اگروہ ان میں سے کسی پرحملہ کرتے تو وہ ایک دہشتگردانہ قدم ہوتا
لیکن ابھی یہ پلوامہ واقعہ

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.