نیب کو اسحاق ڈار کا گھر نیلام کرنے سے روک دیاگیا

چیف جسٹس اطہر من اللہ اور جسٹس لبنٰی سلیم پرویز نے اسحاق ڈار کی اہلیہ کا ضبط گھر واپس لینے کی درخواست پر سماعت کی۔ درخواست گزار کی جانب سے قاضی مصباح ایڈووکیٹ عدالت میں پیش ہوئے۔
وکیل نے موقف اپنایا کہ گلبرگ لاہور میں واقع یہ گھر 14 فروری انیس سو نواسی کو اسحاق ڈار نے اپنی اہلیہ کو حق مہر میں دیا لیکن نیب نے اس گھر کو سربمہر کرتے ہوئے نیلامی کیلئے پنجاب حکومت کی تحویل میں دے دیا۔
عدالت نے دلائل کے بعد احتساب عدالت کے فیصلے پر حکم امتناع جاری کر دیا۔ اسلام آباد ہائیکورٹ نے نیب کو نوٹس جاری کر کے 13 فروری تک جواب طلب کر لیا۔
اسلام آباد ہائیکورٹ کے حکم امتںاعی کے بعد سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے گھر کی نیلامی روک دی گئی اور اسحاق ڈار کے گھر کی نیلامی کے لیے لگائے گئے بینرز اور کرسیاں ہٹا دی گئیں،اسسٹنٹ کمشنر ماڈل ٹاوَن لاہورنے نیلامی اگلی تاریخ تک موخر کر دی۔ اسسٹنٹ کمشنر ماڈل ٹاوَن ذیشان رانجھا نے کہا کہ اسحاق ڈار کے سیکرٹری نے اسٹے آرڈر دکھایا ہے،قانونی ٹیم سٹے آرڈر کا جائزہ لے گی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: