نوازشریف کو”کوٹ لکھپت جیل” منتقل نہ کرنے کا فیصلہ

سابق وزیراعظم نواز شریف کے سپیشل میڈیکل بورڈ کی جانب سے موصول ہونی والی رپورٹ میں کہا گیا ہےکہ سابق وزیراعظم کو پہلے بھی ہارٹ اٹیک ہوچکے ہیں جبکہ نواز شریف کے گردے شوگر کی وجہ سے متاثر ہورہے ہیں۔رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ نواز شریف کی چھاتی کا ایکسرے نارمل ہےتاہم کولیسٹرول لیول بڑھنے سے ان کی شریانوں میں چربی پائی گئی ہے، جس سے شریانیں تنگ ہوگئی ہیں۔میڈیکل بورڈ نے سفارش کی ہے کہ نواز شریف کو ایسی جگہ رکھا جائے جہاں امراض قلب سے متعلقہ تمام طبی سہولتیں ایک ہی چھت تلے 24 گھنٹےمیسر ہوں،،،تاہم میڈیکل بورڈ کی رپورٹ کے بعد محکمہ داخلہ پنجاب نے فیصلہ کیا ہے کہ نواز شریف کو میڈیکل بورڈ کی سفارش پر کوٹ لکھپت جیل منتقل نہیں کیا جائے گا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.