مہنگائی کی چکی میں پسےعوام کا مزید تیل نکالنےتیاریاں

پاکستان اور آئی ایم ایف ٹیکس وصولیوں کے اہداف میں کمی، انفورسمنٹ و ایڈمنسٹریٹواقدامات سمیت دیگر پالیسی سطح کے اقدامات بارے متفق نہ ہو سکے تاہم دونوں میں آئندہ مالی سال کے بجٹ میں 280 ارب روپے کی ٹیکس چھوٹ و مراعات ختم کرنے پر اتفاق ہوگیا
آئی ایم ایف جائزہ مشن پالیسی ٹیم نے اپنے دورے میں توسیع کردی۔ وزارت خزانہ ذرائع کا کہنا ہے آئی ایم ایف کے ساتھ اقتصادی اہداف سمیت دیگر اہم معاملات پر تفصیلی تبادلہ خیال ہوا اور اس ضمن میں آئی ایم ایف کا وفد مزید چند روز پاکستان میں قیام کرے گا۔
آئی ایم ایف حکام کا کہنا ہے کہ ٹیکس وصولیوں کا ہدف حاصل ہونا مشکل ہے تاہم حکومتی اقدامات کے ذریعے ٹیکس وصولیوں کو بڑھایا جائے گا اور نئے ٹیکسز آئندہ بجٹ میں لگانےکا وعدہ کیا گیا ہے، رواں مالی سال کے دوران انفورسمنٹ کو بہتر بناکر اور پالیسی سطح کے اقدامات اٹھا کر اضافی ریونیو اکٹھا کرنے کی کوشش کی جائے گی جبکہ اگلے بجٹ میں ٹیکس استثنی ختم کی جائیں گے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: