مودی سرکار اپنی شاطرانہ چالوں سے باز نہ آئی

بھارتی حکومت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں آرٹیکل370 اور آرٹیکل35 اے کے خاتمہ کے بعد مزید قانونی اور آئینی تبدیلیوں کی سازش کا انکشاف ہوا ہے۔ بھارت کی جانب مقبوضہ کشمیر میں اگلے مرحلے کا بھی آغاز کردیا گیا ہے اور ایک ماہ کے بعد مقبوضہ وادی کی نئی حلقہ بندیاں کی جائیں گی اور اس غیرقانونی اقدام کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے بھارت نےضروری قانونی ترامیم بھی تیارکرلی ہیں۔ نئی منصوبے بندی کے تحت مسلم اکشریتی حلقوں کو تقسیم کیا جائے گا اور نئی حلقہ بندیوں میں ہندو آبادی کو شامل کیا جائیگا اور ان کی اکثریت ثابت کرنے کی کوشش کی جائے گی اور جن علاقوں میں ہندو اکثریت نہیں ہوگی وہاں نئے ووٹر بنا کر نئی بستیاں بنائی جائیں گی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.