موت کے وادی میں پھر سے زندگی لوٹ آئی

0

دنیا بھر پر موت کے سائے کی طرح چھائے کرونا وائرس کے خاتمے کے بعد چین کے
چین کے سب سے زیادہ متاثرہ شہر ووہان میں 76 روز بعد آنے جانے پر عائد تمام سفری پابندیاں ختم کر دی گئیں۔
کرونا وائرس کی وبا سب سے پہلےچین کے شہر ووہان میں سامنے آئی تھی اور ووہان کو 23 جنوری کو مکمل طور پر سیل کردیا گیا تھا تاہم کرونا وائرس کو قابوکرکے چینی حکام نے 76 روزہ لاک ڈاؤن کے بعد ووہان کو آمد و رفت کیلئے کھول دیا ہے۔
چین نے گزشتہ دنوں اعلان کیا تھا کہ وہ 8 اپریل تک ایک کروڑ 10 لاکھ نفوس پر مشتمل شہر ووہان میں لاک ڈاؤن ختم کردے گا جس کے بعد رات 12 بجے ٹریفک حکام نے گاڑیوں کو صوبہ ہوبئی کے دارالخلافہ ووہان سے باہر جانے کی اجازت دے دی۔
سفری پابندیاں اٹھنے پر جیسے ووہان کے شہریوں کو آزادی کا پروانہ مل گیا اوران میں زندگی کی نئی لہر دوڑ گئی،،، دیگر شہروں کے ووہان میں پھنسے لوگوں نے سفری پابندیاں ہٹتے ہی شہر کے مرکزی ریلوے اسٹیشن ووچینگ کا رخ کیا ،اس کے علاوہ ہائی ویز پر بھی گاڑیوں کی قطاریں لگ گئیں تاکہ وہ جلد از جلد اپنے پیاروں کے پاس واپس جاسکیں ۔
چین میں 23 جنوری کے بعد گزشتہ روز پہلی مرتبہ کرونا وائرس سے کوئی ہلاکت سامنے نہیں آئی تھی اور وہاں نئے کیسز کی تعداد بھی انتہائی کم ہے۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: