منی لانڈرنگ کیس میں گرفتار فریال تالپور پولی کلینک ہسپتال سے اڈیالہ جیل منتقل

جعلی اکاؤنٹس اور منی لانڈرنگ کیس میں زیرحراست پاکستان پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری کی ہمشیرہ فریال تالپور کو اتوار کی شب اسلام آباد کے پولی کلینک ہسپتال سے اڈیالہ جیل منتقل کیا گیا۔قومی احتساب بیورو کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ فریال تالپور کو ڈاکٹروں نے ہسپتال سے ڈسچارج کردیا تھا جس کے بعد جیل حکام نے انہیں ہسپتال سے جیل منتقل کیا۔جیل منتقل کے موقع پر فریال تالپور نے میڈیا سے غیررسمی گفتگو کرتےہوئےاپنا شدید احتجاج ریکارڈکروایا،نیب پربرستے ہوئےان کا کہنا تھا کہ نیب کو شرم آنی چاہیےرات 12 بجے ایک عورت کو ہسپتال سے جیل منتقل کیا گیا،،،نیب نے غیر قانونی حرکت کی ہے،،،ادھرپیپلزپارٹی کےچیئرمین بلاول بھٹو نے اپنی پھوپھی فریال تالپور کو ہسپتال سے ڈسچارج ہونے پرجیل منتقل کئے جانے کے اقدام کی شدید الفاظ میں مذمت کی۔ بلاول بھٹو نے اقدام کوسیاسی انتقام سے تعبیرکیاخیال رہے کہ 9 اگست کو اسلام آباد کی احتساب عدالت نے فریال تالپور کا 10 روزہ جوڈیشل ریمانڈ منظور کرتے ہوئے انہیں جیل بھیجنے کے احکامات جاری کیے تھے تاہم طبعیت خراب ہونے کے باعث انہیں پولی کلینک اسپتال منتقل کیا گیا تھا اور وارڈ کو سب جیل قرار دے دیا گیا تھا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.