منی لانڈرنگ کیخلاف سعودیہ بھی عالمی سطح پر کردار اداکریگا

منی لانڈرنگ کے پھیلتے عفریت پرقابوپانے کیلئے سعودی عرب بھی میدان عمل میں اترآیا،،، سعودی عرب نےمنی لانڈرنگ کی روک تھام کےادارے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس میں شمولیت اختیار کرلی اور اس کاباقاعدہ رکن بن گیا۔
ایف اے ٹی ایف انسداد منی لانڈرنگ و دہشت گردی فنڈنگ کابین الاقوامی گروپ ہے جس میں عرب ممالک میں سے سعودی عرب کو پہلی مرتبہ رکنیت ملی ہے۔ایف اے ٹی ایف میں سعودی عرب کی شمولیت کا اعلان اورلانڈو میں ’ایف اے ٹی ایف‘ کے اجلاس میں کیا گیا
واضح رہے کہ سعودی عرب 2015ء سے ایف اے ٹی ایف کا مبصر رکن چلا آ رہا تھا اور اب یہ باقاعدہ ایف اے ٹی ایف گروپ کا رکن بن گیا ہے۔36 رکنی ایف اے ٹی ایف میں بلیک لسٹ سے بچنے کے لئے کم سے کم 3 ممالک کی حمایت لازم ہوتی ہے، پاکستان جون 2018ء سے منی لانڈرنگ کےحوالےسےایف اےٹی ایف کی گرے لسٹ میں ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.