ملک میں کرونا کی انٹری روکنے کے لیے حکومت سرگرم

0

ہمسایہ ممالک میں کرونا کی پر زور انٹری کے بعد حکومت ملک میں کرونا کی انٹری روکنے کے لیے مزید سرگرم ہو گئی ،،سرحدوں پر کرونا سے بچاؤ کے لیے خصوصی اقدامات کیے گئے ہیں ۔ پاک ایران بارڈر پر آئسولیشن وارڈ قائم کیے گئے ہیں اور سرحد پر سکریننگ کا عمل جاری ہے،،دوسری جانب پاکستانی حکام نے 306 ایرانی شہریوں کو وطن واپس جانے کی اجازت دیتے ہوئے پاک-ایران سرحد کو چند گھنٹوں کے لیے کھول دیا۔ توادھرایران میں پھنسے 250 سے زائد پاکستانی مزدوروں نے حکومت سے وطن واپسی کے لیے
اقدامات کی اپیل کر دی ، وزیر داخلہ بلوچستان کا کہنا ہے کہ ایران سے پاکستانیوں کی واپسی کا فیصلہ جلد کیا جائیگا
ایران کے بعد افغانستان میں کرونا وائرس کے کیس سامنے آنے پر پاکستان نے آج سے پاک افغان سرحد باب دوستی پر ڈاکٹرز کی خصوصی ٹیم تعینات کرنے کا فیصلہ کر لیا،باب دوستی پر ایک میڈیکل ٹیکنیشن ٹیم پہلے ہی سے تعینات ہے ،،حکام کے مطابق اب تک افغانستان سے کرونا وائرس کا کوئی مریض پاکستان میں داخل نہیں ہوا ہے،، تاہم پاک افغان دوستی ہسپتال طورخم، لنڈی کوتل اورجمرود ہسپتالوں میں آئسو لیشن وارڈ قائم کرد یے گئے ہیں۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: