ملک بھر میں ڈینگی کے 44 ہزار سے زائد مریض

صحت کے ماہرین کے مطابق ملک میں آب و ہوا کی تبدیلی، بارشوں اور گرمی میں اضافے سمیت کئی وجوہ سے ڈینگی میں ہوش ربا اضافہ ہوا ہے۔ اسلام آباد میں واقع نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ہیلتھ کے سینیئر آفیشل کے مطابق 2011 میں 27 ہزار مریض تھے اور اب اس وقت تک ان کی تعداد 44 ہزار سے زائد ہوچکی ہے تاہم 2011 کی ڈٰینگی وبا میں مرنے والوں کی تعداد قدرے زیادہ یعنی 371 تھی۔
مرکزی اور صوبائی حکومتیں حفاظتی اقدامات میں ناکام ہوچکی ہیں۔ پانی کے ذخائر پر سپرے جیسے سادہ اقدامات میں بھی حکومت ناکام نظرآتی ہے۔ حکومت اس وقت بیدار ہوئی جب سینکڑوں افراد اس سے متاثرہوچکے تھے۔ اب بھی ایسے بہت سے علاقے ہیں جہاں ڈینگی مچھروں کے خلاف سپرے نہیں ہوسکا۔
سب سے زیادہ افراد اسلام آباد اور راولپنڈی میں ہیں جہاں ڈینگی وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 12 ہزار 433 سے تجاوز کرچکی ہے۔ واضح رہے کہ یہ وائرس مچھر سے پھیلتا ہے جو صاف پانی پر پلتا ہے اور پاکستان میں یہ مرض وبائی صورت اختیار کرچکا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.