ملک بھر میں آٹے کا بحران سنگین ہوگیا

0

حکومت ملک میں آٹے کے بحران پر قابو نہ پا سکی،ملک میں آٹے کا بحران شدت اختیار کر گیا۔ حکومتی دعوے اور اقدامات بے سود، آٹا نایاب، چکی کا دیسی آٹا بھی 70 روپے فی کلو ہو گیا۔مہنگائی کے ستائے عوام دہائیاں دینے لگے۔عوام کو روٹی کے بھی لالے پڑ گئے،لاہورآٹا چکی مالکان ایسوسی ایشن قیمتوں میں اضافہ برقرار رکھنے پر بضد ہے۔
لاہورآٹا چکی ایسوسی ایشن کے صدر لیاقت علی ملک کہتے ہیں حکومت سے ایک ہی مطالبہ ہے کہ گندم سستی کر دیں تو ہم بھی آٹا سستا کر دیں گے۔ غلہ منڈیوں میں گندم کی قیمت زیادہ ہے، بجلی کے بل بھی کئی گنا بڑھ چکے ہیں۔آٹا بحران کے بعد روٹی اور نان کی قیمت بڑھانے کے لیے متحدہ نان روٹی ایسوسی ایشن بھی میدان میں ہے۔
نان روٹی ایسوسی ایشن کے صدر افتاب گل کہتے ہیں آٹا اور میدہ مہنگا ہے، مزدور کی اجرت بھی زیادہ ہے۔مہنگائی کی دوہری چکی میں پسی عوام کا کہنا ہے کہ قوت خرید مکمل ختم ہو چکی مگر بچوں کو دو وقت کی روٹی کھلانا تو مجبوری ہے، پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن کے مرکزی چیئرمین عاصم رضا کہتے ہیں آٹے کی قیمتوں میں اضافہ چکی مالکان کی طرف سے کیا گیا، اس کا ہم سے کوئی لینا دینا نہیں۔
دوسری جانب کراچی میں دکانداروں نے سرکاری قیمتیں ماننے سے انکار کردیا،،،لاہور،گوجرانوالہ،ملتان میں آٹا مارکیٹوں سےغائب ہے،،،پشاور میں نان بائیوں نے کل سے ہڑتال کا اعلان کر دیا،جبکہ حکومت کا دعویٰ ہے کہ آ ٹے کے بحران پر جلد قابو پا لیں گے، بروقت اقدامات سے آٹے کی قیمت نیچے آئے گی۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: