مقبوضہ کشمیر میں 196ویں روز بھی زندگی قید

0

قابض بھارتی فوج نےجنت نظیر وادی کو درد کی تصویر بنا ڈالا۔وادی کشمیر میں بھارت کی طرف سے مسلط کردہ غیر انسانی لاک ڈاؤن اور مواصلاتی بندش کے باعث مسلسل 196 ویں روز بھی معمولات زندگی بدستور مفلوج ہیں۔وادی میں ادویات اور خوراک کی شدید قلت برقرار ہے،سڑکیں سنسان،دکانیں،کاروبار،تعلیمی مراکز بند ہیں،وادی میں موبائل فون،انٹرنیٹ سروس بند اور ٹی وی نشریات بھی تاحال معطل ہیں۔ لوگ گھروں میں محصور ہو کر رہ گئے ہیں۔
کشمیر میڈیا سروس کے مطابق مقبوضہ وادی میں قابض فوج کی ظالمانہ کارروائیوں میں کمی نہ آسکی۔بھارتی فورسزنے مزید 4 نوجوانوں کو گرفتارکرلیا۔چاروں افرادکا تعلق سرینگرسے ہے۔سینئر رہنما سیّد علی گیلانی کی رہائش گاہ کے باہر بھارتی فورسز کی مزید نفری تعینات کر دی گئی ہے۔ قابض فوج کی بھاری نفری کی موجودگی نے عوام میں خوف وہراس پھیلا دیا۔
دوسری طرف کنونیئر آل پارٹی حریت کانفرنس کا کہنا ہے کہ چیئرمین کو بھی نقل وحمل میں مشکلات کا سامنا ہے۔ حریت رہنما کی طبعیت خراب ہے اورسوشل میڈیا پر افواہوں کا بازارگرم ہےان کا کہنا ہے کہ افواہوں کی وجہ سے بھی دنیا بھر میں کشمیریوں کو پریشانی کا سامنا ہے۔عوام سے بزرگ حریت رہنما سیّد علی گیلانی کی صحتیابی کیلئے دعا کی اپیل کی ہے۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: