مقبوضہ کشمیر میں بڑھتی کشیدگی پر امریکا کا اظہار تشویش

امریکی محکمہ خارجہ کی ترجمان مورگن آرٹگس نے واشنگٹن میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ مقبوضہ کشمیر سے متعلق ہمارا مؤقف تبدیل نہیں ہوا۔ مورگن آرٹگس نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں پیدا ہونے والی پیش رفت کا بغور جائزہ لے رہے ہیں اور اس حوالے سے پاکستان اور بھارت کے ساتھ رابطے میں ہیں۔امریکی محکمہ خارجہ کی ترجمان نے مقبوضہ کشمیر میں گرفتاریوں پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مقبوضہ وادی میں غیر قانونی اقدامات سے گریز کیا جائے۔امریکا کا یہ بیان مقبوضہ کے موجودہ حالات کے تناظر میں آیا ہے جب مودی سرکار کی جانب سے مقبوضہ وادی کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے بعد وادی میں کرفیو نافذ ہے اور بھارتی انتظامیہ نے پورے کشمیر کو چھاؤنی میں تبدیل کررکھا ہے۔ بھارتی اقدامات کیخلاف احتجاج پر قابض بھارتی فوجیوں نے نہتے کشمیریوں پر براہ راست فائرنگ، پیلٹ گنز اور آنسو گیس کی شیلنگ کی جس کے نتیجے میں 6 کشمیری شہید اور 100 کے قریب زخمی ہوئے۔ احتجاج کرنے والے 500 سے زائد کشمیریوں کو بھی حراست میں لے لیا گیا ہے۔ حریت قیادت سمیت بھارت کے حامی رہنما محموبہ مفتی اور فاروق عبداللہ بھی نظر بند ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.