مقبوضہ کشمیرمیں ظلم کا اندھیراچھائے212روزہوگئے

0
مقبوضہ کشمیرمیں کرفیو،ظلم وبربریت کا سلسلہ 212 روز سے جاری ہے،، مسلسل لاک ڈاؤن کے باعث صورتحال انتہائی سنگین ہو گئی ہے،،لوگ گھروں میں محصور ہوکر رہ گئے ہیں۔ وادی میں پری پیڈ موبائل، ایس ایم ایس اورانٹرنیٹ سروسز تا حال معطل ہیں۔ کاروباری بند ،سکول اور سرکاری دفاتر طلباءاور عملے سے خالی ہیں، پبلک ٹرانسپورٹ بھی سڑکوں سے غائب ہے۔
دوسری جانب چپے چپے پر بھارتی فورسز کی بھاری نفری تعینات ہونے سے وادی چھاؤنی میں تبدیل ہو چکی ہے۔قابض فوج خواتین کی عصمت دری، بچوں، بوڑھوں اور جوانوں کو سرچ آپریشن کی آڑ میں تشدد کا نشانہ بنا رہی ہے۔ اب تک حریت رہنماؤں سمیت سینکڑوں کشمیریوں کو گرفتار کیا جا چکا ہے۔ بڑھتے ظلم وستم سےوادی کمشیریوں کی آہوں اور سسکیوں سے گونج رہی ہے۔
5اگست کو مودی سرکار نے کشمیر کو خصوصی حیثیت دینے والے بھارتی آئین کے آرٹیکل 370 اے کو ختم کر کے مقبوضہ وادی میں کرفیو نافذ کیا تھا جس کے بعد مودی سرکار کو دنیا بھر میں شدید تنقید کا سامنا ہے تاہم بھارت ہٹ دھرمی برقرار رکھے ہوئے ہے۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: