!!!معیشت کے مالی محاذ کی خراب ہوتی صورتحال

معیشت کے مالی محاذ کی خراب ہوتی صورتحال کے باعث آئی ایم ایف نے اپنا ایس او ایس مشن اس ماہ پاکستان بھیجنے کا فیصلہ کیا ہے جو بڑھتے ہوئے بجٹ خسارے میں کمی لانے کے طریقے اور ذرائع بتائے گا۔ آئی ایم ایف ٹیم مطلوبہ حدود میں بنیادی خسارے کے ہدف کو محدود رکھنے کی خصوصی توجہ کے ساتھ مالی مسائل پر گفتگو کرے گی۔
سرکاری ذرائع کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف کی ایک تکنیکی ٹیم عاشورہ محرم کے بعد 17 ستمبر کو پاکستان آئے گی جو ممکنہ طور پر 10 دن ٹھہرے گی۔ مالی اہداف خصوصاً بنیادی خسارے ک حوالے سے بڑے پیمانے پر غلط بیانی کی گئی ہےجیسا کہ آئی ایم ایف نے بنیادی خسارے کو رواں مالی سال جی ڈی پی کے 1.8 فیصد سے کم کرکے 0.6 فیصد کرنے کی شرط رکھی ہے۔ اب بنیادی خسارہ جی ڈی پی کے 3.6 فیصد تک بڑھ گیا ہے اور کوئی نہیں جانتا کہ 1300 ارب روپے کی بڑی ایڈجسٹمنٹس بنیادی خسارے کو جی ڈی پی کے 0.6 فیصد تک لانے کیلئے کیسے کی جاسکیں گی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.