محبوبہ مفتی کو بھارتی جبر کیخلاف آواز اٹھانے پردھمکیاں

مقبوضہ کشمیر کی سابق وزیراعلیٰ محبوبہ مفتی کی بیٹی التجا مفتی نےامریکی نشریاتی ادارے کو انٹرویو میں کہا کہ بھارتی جبرکے خلاف آواز اُٹھانے پر دھمکیاں دی جا رہی ہیں۔والدہ کا ٹوئٹر اکاؤنٹ استعمال کرنے پر بھی گرفتاری کی دھمکیاں دی جا رہی ہیں
التجا مفتی کہتی ہیں کہ مودی سرکار نے لاکھوں کشمیریوں کو یرغمال بنایا ہوا ہےاور مقبوضہ وادئ میں خوف وہراس پھیلا نا مودی سرکار کا ایجنڈا ہے،،کشمیریوں کی ایک بڑی تعداد بھارتی مظا لم کیخلاف آواز اٹھانے سے بھی خوفزدہ ہے کیونکہ آٹھ سال کی عمر کے بچے اور بچیوں کو قید و بند میں تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے
التجا مفتی کہتی ہیں کہ یہ وہ ملک ہی نہیں ہے جہاں میں بڑی ہوئی ہوں،،،یہ وہ ملک بن چکا ہے جس میں نہ اقلیتوں کو نفرت اور ظلم و ستم کا نشانہ بنایا جا رہا ہے ۔آخری سانس تک دنیا کے سامنے مودی حکومت کا مکروہ چہرہ سامنے لاتی رہوں گی، مودی سرکار کے اوچھے ہتھکنڈے سچ بتانے سے نہیں روک سکتے
انہوں نے کہا کہ یہ نہ صرف انڈیا ، برصغیر بلکہ عالمی برادری کیلئے لمحہ فکریہ ہے ۔ دنیا کے سامنے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال عیاں ہے،،،عالمی رہنماوں کو تجارت اور جیو پولیٹکس سے ہٹ کر اس مسئلے کو دیکھنا ہوگا کیونکہ یہ خوف و ہراس کے اندھیروں میں قید 80 لاکھ انسانوں کی بقا کا سوال ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.