قوم کےمحسن اورعظیم رہنماچوہدری رحمت علی کی69ویں برسی

0

تحریک پاکستان کے بانیوں میں سے ایک اور پاکستان کا نام تجویز کرنے والے چوہدری رحمت علی حقیقی معنوں میں پاکستان کے ہیرو اور محسن ہیں، جنہوں نے 1915ءمیں تقسیم ہند کا نظریہ پیش کیا۔1933 میں انہوں نے دوسری گول میز کانفرنس میں اپنے مشہور کتابچے ” نائو آر نیور“ میں پہلی مرتبہ لفظ پاکستان استعمال کیا۔ جو تحریک پاکستان کے قلعے کی آ ہنی دیوار ثابت ہوااور برصغیر کے مسلمان و دیگر اقوام لفظ ”پاکستان“ سے آشنا ہوئے۔۔
16نومبر1897ءمیں مشرقی پنجاب کے ضلع ہوشیار پور کے گاﺅں مو ہراں میں پیدا ہونے والے اس عظیم رہنما نے اخبارات میں نہ صرف کام کیا بلکہ دی فادرلینڈ آف پاک نیشن اور مسلم ازم اور انڈس ازم سمیت متعدد کتابچے بھی قلم بند کیے۔انہوں نے۔1933ءمیں انہوں نے برصغیر کے طلباءپر مشتمل ایک تنظیم پاکستان نیشنل لبریشن موومنٹ کے نام سے قائم کی۔
14 اگست 1947ءکو چوہدری رحمت علی کے تجویز کردہ نام کو تعبیر مل گئی،پاکستان معرض وجود میں آگیا۔ تاہم ملک وقوم کیلئے محنت ، جدو جہد اور لازوال خدمت کرنے والے عظیم رہنما کو آزاد فضا میں زیادہ عرصہ تک سانس لینا نصیب نہ ہوا۔29جنوری1951ءکو نمونیہ کے مرض کے باعث 3 فروری کو جہان فانی سے کوچ کر گئے۔تاہم ملکی تاریخ اور قوم کے دلوں میں آج بھی زندہ ہیں۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: