قرارداد پاکستان منظورکرنے والی سندھ اسمبلی کو 77 سال مکمل

موجودہ سندھ اسمبلی کی تاریخی عمارت کی تعمیر کو 77سال مکمل ہوگئے،2منزلہ اس تاریخی عمارت کا سنگ بنیاد 11مارچ 1940کو رکھا گیا جبکہ 4مارچ 1942کو گورنر سندھ ہیوگ ڈاؤ نے سندھ اسمبلی کی تاریخی عمارت کا افتتاح کیاتھا،،،سندھ اسمبلی کی قدیمی عمارت میں ارکان اسمبلی کا ایوان،سپیکر سیکریٹریٹ، قائد ایوان،قائد حزب اختلاف ، لائبریری،سپیکر چیمبر، کیفے ٹیریا، لیجسلیشن و پروسیڈنگ سیکشن، محکمہ قانون کے افسران کے دفاتر،وزرا، اسمبلی سیکریٹریٹ افسران کے دفاتر اور کمیٹی روم موجود ہیں،قیام پاکستان سے قبل اس عمارت میں سندھ قانون ساز اسمبلی کے اجلاس ہوا کرتے تھے۔سندھ اسمبلی کی تاریخی عمارت کراچی سے دارالحکومت اسلام آباد منتقل ہونے تک دستور ساز اسمبلی رہی اور بعد میں موجودہ عمارت میں سندھ اسمبلی کے اجلاس ہوتے رہے ،سندھ اسمبلی کی تاریخی عمارت میں پاکستان کے نامورسیاستدانوں ممتاز علی بھٹو،غلام مصطفیٰ جتوئی،غوث علی شاہ،قائم علی شاہ،جام صادق علی،عبداللہ شاہ،ارباب رحیم نے بھی قائد ایوان کے طورپر ذمے داریاں سنبھالیں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.