!!!فوادچودھری نااہلی کیس

اسلام آباد ہائی کورٹ میں وزیرسائنس و ٹیکنالوجی فواد چودھری کی نااہلی کیس کی سماعت ہوئی،چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ جسٹس اطہر من اللہ نے ریفرنس کی سماعت کی،دائر درخواست میں وفاقی وزیر پر اثاثے چھپانے کا الزام عائد کیا گیا ہے اور کہا گیا ہے کہ انہوں نے الیکشن کمیشن میں درست معلومات نہیں دیں۔
درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ فواد چوہدری کو 62 ون ایف کے تحت نااہل قرار دیا جائے۔درخواست میں فوادچودھری، الیکشن کمیشن، ایف آئی اے اور دیگر کو فریق بنایا گیا۔دوران سماعت درخواست گزار نے استدعا کی ہے کہ فواد چودھری کو بطور رکن اسمبلی جو مراعات دی جارہی ہیں واپس لی جائیں اور ان کے خلاف ضابطہ فوجداری کے تحت مقدمہ درج کیا جائے۔
عدالت نے ریمارکس دیئے کہ عدالت کو سیاسی معاملات میں مداخلت کیوں کرنی چاہیے؟ مطمئن کریں، چیف جسٹس اسلام آبادہائیکورٹ نے کہا کہ سیاسی معاملات سیاسی فورمز پر حل ہونے چاہیں، میری عدالت نے ہمیشہ سیاسی کیس میں مداخلت کی حوصلہ شکنی کی، چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ کون سا انسان صادق اور امین ہو گا؟ہم نے خواجہ آصف کو نااہل کیا سپریم کورٹ نے بحال کردیا،مثال ہمارے سامنے ہے،عدلیہ کو بطور ادارہ سیاسی معاملات میں پڑنا ٹھیک نہیں،عدالت نے فواد چودھری کو نوٹس جاری کرتے ہوئے2ہفتوں میں جواب طلب کرلیا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.