صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹرپرٹوئٹ کرتے ہوئے کہا ہے کہ سٹریٹجک پٹرولیم ذخائر سے تیل ریلیز کرنے کا اختیار دے دیا۔امریکی صدر کے مطابق تیل کی مقدار کا تعین مارکیٹ ضروریات کے مطابق کیا جائے گا۔ ٹوئٹ امریکی صدر نے مزید کہا کہ سعودی عرب کی آئل سپلائی پر حملہ کیا گیا ہم مجرم کو جانتے ہیں، ہم نےمکمل طور پر مسلح اور ہدف کا تعین بھی کر رکھا ہے، صرف تصدیق چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا ہم سعودی عرب سے سننے کے منتظر ہیں کہ وہ کسے حملے کا ذمے دار سمجھتا ہے اور کن شرائط پر ہمیں آگے بڑھنا چاہیے۔

ارے مہاراج آپ نے کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کی،،، کنٹرول لائن پر بمباری بھی آپ کا روز کا معمول ہےلیکن پاکستان نے صبر کا مظاہرہ کرتے ہوئے ابھی تک آپ کو کچھ نہیں کہا تو پھر آُپ کے دیس میں یہ رونا دھونا کیسا؟؟؟؟ آخر ایسی کیا آفت آن پڑی کہ آپ کے عوام کی آنکھوں سے گرتے آنسوتھمنے کا نام نہیں لے ۔
بھارتی شہریوں کی فوٹیج پر روتے ہوئے بچے کی آواز
یقیناً آپ بھی سوچ میں پڑ گئےہوں گےکہ آخر بھارتیوں کے رونے کے پیچھے کیا راز پوشیدہ ہے،،،تو چلیں ہم اس راز سے پردہ اٹھائے دیتے ہیں ،،،،ابھی چند ہی ماہ پہلے آپ کو وہ بھارتی یاد ہوں گے جنہوں نے پاکستانیوں کو ٹماٹر کے بغیر ہنڈیا پکانے کا طعنہ دیا تھالیکن ان عقل کے اندھوں کو کیا خبر تھی کہ ایک وقت ایسا بھی آئے گا کہ وہ پیاز کاٹے بغیرہی رونے پر مجبور ہوجائیں گے۔ خبر یہ ہے کہ مودی کے دیس میں ان دنوں پیاز ایسا انمول ہو چکا ہے کہ لوگ پیسے لئے پھرتے ہیں لیکن انہیں پیاز نہیں ملتا جس کے باعث بھارتی شہری بے ذائقہ کھانا کھانے پر مجبور ہیں ۔بھارت میں پیاز کی قلت پہلی بار نہیں ہوئی بلکہ یہ ہر سال ہوتی ہےاور اس کیلئے وہ پاکستان سے پیاز منگواتا ہے لیکن اس بار مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے بعد پاکستان نے بھارت سے تجارتی تعلقات ختم کردیئے ہیں ،،،جس کے بعد ایٹم بم کی دھمکیاں دینے والوں کو پیاز کے لالے پڑگئے ہیں اور جنگی جنون میں مبتلا مودی کو ووٹ دینے والے بھی بری طرح پچھتارہے ہیں اور حکومت کے خلاف سراپا احتجاج ہیں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.