شہبازشریف کی حاضری سےاستثنیٰ کا فیصلہ فوری معطل کرنے کی استدعا مسترد

0

لاہورہائیکورٹ میں شہبازشریف کی ٹرائل کورٹ سے مستقل حاضری سےمعافی کیخلاف نیب کی درخواست پر سماعت ہوئی،نیب نے اپنی درخواست میں شہبازشریف کوفریق بنایا ہے ،نیب کی جانب سے موقف اختیار کیاگیا ہے کہ شہبازشریف کیخلاف آشیانہ اقبال اور رمضان شوگر ملز ریفرنس زیر سماعت ہیں ،ٹرائل کورٹ نے قانون کے برعکس مستقل حاضری معافی کی درخواست منظور کی ،
درخواست میں موقف اپنایا گیا کہ شہباز شریف آشیانہ اوررمضان شوگر ملز ریفرنس میں مرکزی ملزم ہیں ۔ درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ لاہورہائیکورٹ شہبازشریف کو مستقل حاضری معافی دینے کا فیصلہ کالعدم قراردے اورعدالت شہبازشریف کو ٹرائل میں شامل ہونے کا حکم دے۔
عدالت نے نیب کے وکیل سے استفسار کیا کہ شہبازشریف کے پیش نہ ہونے سے ٹرائل کیسے متاثر ہوگا؟،نیب نے موقف اختیار کیا کہ شہبازشریف کے خلاف احتساب عدالت میں دو ریفرنسز کا ٹرائل جاری ہے ،لاہورہائیکورٹ نے شہبازشریف کو نوٹس جاری کرتے ہوئے24مارچ کو جواب طلب کرلیا۔
دوسری جانب قومی احتساب بیورو نے 12 سرکاری پلاٹس کی الاٹمنٹ میں شہباز شریف کے ملوث ہونے کا کوئی شواہد نہ ملنے پر نیب کی ریجنل بورڈ میٹنگ میں تحقیقات بند کرنے کا فیصلہ کرلیا جس کے بعد چیئرمین نیب کو انکوائری بند کرنے کی سفارش بھیج دی گئی ۔
شہباز شریف کے خلاف انکوائری کرنے والی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے مؤقف اپنایا کہ انکوائری میں نامزد میاں عطااللہ اور میاں رضاعطا اللہ وفات پا چکے ہیں جبکہ شہباز شریف کے ملوث ہونے کے ٹھوس شواہد بھی تاحال نہیں ملے۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: