سعودی عرب:295 ارب ڈالر کا مالی بجٹ منظور

Budget Of Saudi Arab Accepted

ریاض میں سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی زیر صدارت کابینہ کا خصوصی اجلاس ہوا، جس میں مالی سال 2019-20 کے بجٹ کی منظوری دی گئی۔ شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے اس موقع پر عوام کےلئے ریلیف پیکیج کا بھی اعلان کیا، جس کے تحت اب سول اور فوج کے ملازمین کو ہر ماہ 1 ہزار ریال مہنگائی الاؤنس دیا جائے گا۔ شاہی فرمان میں ریٹائرڈ ملازمین اور سوشل انشورنس لینے والے شہریوں کو ماہانہ 500 ریال الاؤنس دیا جائے گا جبکہ طلباء اور طالبات کے وظیفے میں بھی 10 فیصد اضافہ کیا گیا ہے۔ وزیر خزانہ محمد الجدعان نے بجٹ کی تفصیلات بیان کرتے ہوئے بتایا کہ ملکی تاریخ کے سب سے بڑے بجٹ میں تعلیم پر سب سے زیادہ رقم مختص کی گئی ہے۔ سعودی بجٹ کے اخراجات میں 7 فیصد اضافے کے ساتھ صرف 4 فیصد یعنی 131 ارب ریال کے خسارے کا بجٹ پیش کیا گیا۔ بجٹ اعداد و شمار کے مطابق سعودی حکومت نے آئندہ مالی سال کے دوران آمدنی کی مد میں 9 فیصد اضافے یعنی 975 ارب ریال کا تخمینہ لگایا ہے۔ نئے بجٹ میں تعلیم کے شعبےکے لئے 193 ارب ریال جبکہ عسکری شعبے کےلئے 191 ارب ریال مختص کئے گئے ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.