سائیکل پر سوار کوئی نہیں پھر بھی چلے گی

سائنس ترقی کرتے کرتے یہاں تک پہنچ گئی کہ انسانی عقل سے بنائی ہوئی ایجادات نے خود انسان ہی کی وقعت ختم کردی۔مصنوعی ذہانت نے دنیائے سائنس میں انقلاب برپا کردیا۔چینی سائنس دانوں نے مصنوعی ذہانت والی خود مختار سائیکل تیار کرلی۔ ایک ایسی سائیکل جس میں مصنوعی ذہانت والی چپ لگی ہے اور یہ سائیکل بغیر کسی سوار کے خود بخود چل سکتی ہے۔ہائیبرڈ ٹیکنالوجی سے لیس سائیکل آواز سن سکتی ہے اوراس آواز کا جواب دینے کی صلاحیت بھی رکھتی ہے۔ آپ سائیکل کو جو کہیں گے یہ ویسے ہی چلے گی۔ دائیں کہیں گے تو دائیں، بائیں کہیں گے تو بائیں مڑ جائے گی۔ سیدھا چلنے کا حکم دیں گے تو سیدھا چلے گی، سامنے کوئی رکاوٹ آئی تو راستہ بدل لے گی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.