ذہنی بیمار مودی سرکار،،،خطے میں کشیدگی بڑھانےکو تیار

مودی سرکارنےایک اور گھناؤنا اقدام کرتے ہوئے پورے مقبوضہ کشمیر میں دفعہ 144 نافذ اور اجتماعات پر پابندی عائد کردی جبکہ دارالحکومت سری نگر میں غیر معینہ مدت تک کے لیے کرفیو لگا دیا ۔ مقبوضہ وادی میں جگہ جگہ فوجی دستے تعینات کردیئے گئے جبکہ مزید70ہزارفوجی بھیجنے کی بھی تیاریاں کی جارہی ہیں،،،300 انتظامی و فوجی حکام کو سیٹلائٹ فونز دے دیئے گئےدوسری جانب بھارتی حکومت نے کشمیری رہنماؤں کے خلاف کریک ڈاؤن کرتے ہوئے دو سابق وزرائے اعلیٰ محبوبہ مفتی، عمر عبداللہ سمیت دیگر کو گھروں پرنظر بند کردیا ۔ بھارت سرکار کے اس اقدام پرعمرعبداللہ نےاپنےٹویٹ میں لوگوں کو قانون ہاتھ میں لینے سے گریز کرنے کی تلقین کرتے ہوئے کہا کہ”اللہ ہماری حفاظت کرے،پھر ملاقات ہوگی” ۔ جبکہ محبوبہ مفتی نے تحفظات نے اپنےٹویٹ میں کہا کہ “یہ وہی جموں و کشمیر ہے جس نے جمہوری سیکولر بھارت کا انتخاب کیا لیکن آج ناقابل فہم حد تک ظلم و ستم برداشت کررہا ہے،،، جاگو بھارت’ادھر مقبو ضہ وادی میں موبائل ، لینڈلائن فون اورانٹرنیٹ سروسز معطل کردی گئیں ۔ سکول اور کالجز سمیت تمام تعلیمی ادارے بند کردیئے گئے جبکہ یونیورسٹیز میں 5 سے 10 اگست تک ہونے والے امتحانات کو ملتوی کردیا گیا ۔مقبوضہ کشمیر میں مودی سرکار نے سیکورٹی ریڈ الرٹ جاری کرکے سیاحوں کو فوری طور پر وادی چھوڑنے کی ہدایت کر دی جس کے بعد وادی کی سیاحت کیلئے آئے ہزاروں بھارتی اور غیرملکہ سیاحوں نے واپسی کا سفر شروع کردیا ہے اس کے علاوہ ہندو یاتریوں،طلبہ اور پیشہ ور افراد کی جانب سے بھی وادی چھوڑنے کا سلسلہ جاری ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.