دنیا کو پانچ سال بعد پھرعالمی وبا کا خدشہ،ماہرین نے خبردار کردیا

0
عالمی ادارہ صحت کے ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ اس سال کرونا وائرس کی عالمی وبا کا سامنا کرنے کے باوجود ہم مجموعی طور پر کسی بھی اگلی عالمی وبا کےلیے بالکل بھی تیار نہیں اور یہ بات اگلی کسی بھی وبا کو زیادہ خطرناک اور ہلاکت خیز بنا سکتی ہے۔
یہ بات وباؤں اور امراض کے حوالے سے عالمی تیاریوں پر نظر رکھنے والے ڈبلیو ایچ او کے ماتحت ادارے "گلوبل پریپیئرڈنیس مانیٹرنگ بورڈ” نے اپنی تازہ ترین رپورٹ میں کہی ہے ،، رپورٹ میں دنیا بھر میں کووڈ 19 کا پھیلاؤ روکنے کےلیے کیے گئے اقدامات پر کڑی نکتہ چینی کرتے ہوئے انہیں ناکافی، غیر مناسب اور غیر تسلی بخش قرار دیا گیا ہے۔حکومتی ردِعمل پر تنقید کرتے ہوئے اس رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ اگرچہ ماہرین نے ابتدائی دنوں میں ہی خبردار کردیا تھا کہ کرونا وائرس کی بیماری بہت جلد ایک عالمی وبا میں بدل سکتی ہے لیکن بیشتر حکومتوں نے اس تنبیہ کو نظرانداز کیے رکھا، یہاں تک کہ ان ملکوں میں کووڈ 19 کا پھیلاؤ قابو سے باہر ہوگیا۔رپورٹ میں اس ردِعمل پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ اگر یہی رویہ جاری رہا تو اگلی کوئی بھی عالمی وبا، کووِڈ 19 کے موجودہ عالمگیر پھیلاؤ کے مقابلے میں زیادہ خطرناک اور جان لیوا ثابت ہوسکتی ہے۔ گزشتہ 100 سال کے دوران اس دنیا کو دس مرتبہ عالمی وباؤں کا سامنا رہا اور اس حساب سے اگلی عالمی وبا آئندہ پانچ سال سے لے کر تیس سال تک کے درمیان کسی بھی وقت آسکتی ہے۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: