خطے میں ہتھیاروں کی نئی دوڑشروع ہونے کا خدشہ

0

امریکا نے روس کے ساتھ جوہری ہتھیاروں سے متعلق ایک اہم معاہدے سے دستبرداری کا اعلان کردیا جس کے بعد نیٹو میں شامل ممالک اور روس کے درمیان جوہری ہتھیاروں کی نئی دوڑ شروع ہونے کا امکان پیدا ہوگیا ہے۔امریکا اور روس کے درمیان انٹرمیڈیٹ رینج نیوکلیئر فورس نامی معاہدہ 1987 میں سرد جنگ کے دور میں ہوا تھا، نیٹو کے سربراہ جینز اسٹولٹن برگ اور امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے معاہدے کے ختم ہونے کا ذمہ دار روس کو ٹھہرایا ہے۔نیٹو سربراہ نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ ان کی تنظیم کوشش کرے گی کہ امریکا اور روس کے درمیان معاہدہ ختم ہونے کے بعد خطے میں جوہری ہتھیاروں کی نئی دوڑ شروع نہ ہو۔رواں برس فروری میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا تھا کہ اگر روس نے مذکورہ معاہدے کی پاسداری یقینی نہ بنائی تو 2 اگست کو امریکا معاہدے سے دستبردار ہوجائے گا۔گزشتہ برس اکتوبر میں بھی امریکی صدر نے روس کے ساتھ ایٹمی ہتھیاروں کا معاہدہ ختم کرنے کی دھمکی دی تھی دوسری جانب صدر ٹرمپ نے سابق روسی جاسوس اور اس کی بیٹی کو زہر دینے کے معاملے پر روس پر مزید پابندیاں عائد کردیں۔ روسی سینیٹر فرینڈکس کیلنسویچ نے خبردار کیا ہےکہ ماسکو پر نئی امریکی پابندیوں سے دونوں ممالک کے تعلقات میں مزید کشیدگی بڑھے گی۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: