خسارے میں ڈوبی معیشت پر سرکاری ادارے بھی بھاری

سرکاری ادارے عوام کی جیبوں پر بھاری پڑنے لگے۔ عوام کی خون پسینے کی کمائی سے حاصل کیا گیا ٹیکس خسارے میں ڈوبے سرکاری اداروں پر خرچ کیا جا رہا ہے۔ رواں مالی سال کے نو ماہ میں سرکاری ادارے مزید 294 ارب روپے کے مقروض ہو گئے۔ سٹیٹ بینک کے مطابق سرکاری اداروں کے قرضے 1593 ارب روپے سے تجاوز کرگئے۔ مارچ 2019ء تک قومی ائیرلائن (پی آئی اے) پر واجب الادا قرضوں کاحجم 156 ارب، واپڈاپر 88 ارب، پاکستان سٹیل ملز پر 43 ارب روپے تک پہنچ چکا ہے۔ اس کے علاوہ دیگر سرکاری ادارے اس وقت 1084 ارب روپے کے مقروض ہیں۔معاشی تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ اگر حکومت نے قرض میں ڈوبے ان اداروں کی نجکاری میں تیزی نہ دکھائی تو یہ ادارے عوام سے وصول کیے گئے ٹیکسوں پر ہی چلتے رہیں گے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.