جوکام حکمران نہ کرپائے وہ گوگل نے کردکھایا

0

مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت بھلے ایک سو انتالیس روپے ہی کیوں نہ ہو، مگر سرچ انجن میں ایک امریکی ڈالر کی قدر چھہتر روپے پچیس پیسے دکھائی گئی۔ گوگل کرنسی کنورٹر کے مطابق امارتی درہم بیس روپے چھہتر پیسے جبکہ یورو ستاسی روپے 3 پیسے کا خریدا جاسکتا تھا۔ گوگل نے اسی طرح ہر کرنسی کے مقابلے میں پاکستانی کرنسی کی شرح بڑھا دی۔
نومبر میں ایک ہی دن میں ڈالر کی قدر میں ریکارڈ اضافہ ہواتھا مگر گوگل نے ڈالر کی قدر میں کمی کے سب ریکارڈ توڑ ڈالے۔گوگل کے کرنسی کنورٹر پر پاکستانی روپے اور دیگر کرنسیوں کے شرح مبادلہ کے غلط نتائج پروگرامنگ کی غلطی کا نتیجہ ہوسکتے ہیں لیکن یہ کارنامہ سوشل میڈیا پر وائرل ہونے سے لوگ ضرور تجسس میں مبتلا ہوگئے ہیں۔

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: