جنت نظیر وادی میں گجرات کےقصائی کی بربریت!!!

جنت نظیر وادی کو جہنم بنانے والی مودی سرکار کا آخری لمحات میں چاند سے رابطہ ٹوٹا تو بلک بلک کے روپڑی،،،مگر اپنوں کیلئے تڑپتی نہتی کشمیری عوام پرترس نہ آیا،،، بھارت کا چاند پرقدم رکھنے کا مشن ناکام ہونے کے بعد کشمیری نوجوان نے بھارتی خلائی ایجنسی کےسربراہ کوخط لکھا اور کھل کر اپنے جذبات اوراحساسات کا اظہار کیا،،،کشمیری نوجوان نے کہا ہے کہ مجھے دیکھیں ۔ میں تو کئی ہفتوں سےاکیلا کھڑا ہوں اور آپ کو یہ خط لکھ رہا ہوں۔کشمیری نوجوان نے کہا کہ آپ کا رابطہ آخری لمحات میں چاند سے ٹوٹاتو آپ کو لاکھوں تسلیاں ،دلاسے ملتے ہیں۔ میر ا رابطہ ایک ماہ سے میرے چاند یعنی میری ماں سے منقطع ہے ، رابطے ٹوٹنے کا دکھ مجھ سے بہتر کون جان سکتا ہے ؟آپ کو اپنے خلائی جہاز سے رابطے کی دوبارہ امید ہے، میرے پاس تو یہ امید بھی نہیں ہے ۔کشمیر ی نوجوان کا کہناتھا کہ ڈاکٹر “کے سیوان”آپ کا دکھ بحیثیت کشمیر ی میں بخوبی سمجھ سکتاہوں،آپ تو خوش قسمت ہیں کہ آپ کو وزیر اعظم مودی نے تھپتھپایا اور گلے لگایا ،مجھے دیکھیں اپنے پیاروں سے رابطہ ٹوٹے ایک ماہ سے زیادہ ہوگیا ہے لیکن کوئی دلاسا دینے بھی نہیں آیا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.