جعلی بینک اکاؤنٹس کیس

وکیل صفائی نے کہا کہ آئیکون ٹاور ابھی بھی وہیں کا وہیں موجود ہے، کیا آئیکون ٹاور کو سِیل کرنے کی کوشش کی گئی؟ کیا وہ زمین واپس لینے کے لئے کوئی بھی کوشش کی گئی؟ سات سال پہلے ریٹائر ہونے والے ڈی جی پارکس کو گرفتار کر لیا گیا، لینڈ ڈیپارٹمنٹ کے کسی بھی شخص کو پوچھا تک نہیں گیا۔ نیب پراسیکیوٹر نے کہاکہ جب باغ ابن قاسم کی زمین غیر قانونی الاٹ ہوئی لیاقت قائمخانی کسٹوڈین تھے جبکہ تفتیشی افسر نے بتایا کہ اگر یہ 2011 میں ریٹائر ہو گئے تھے تو اصل ریکارڈ گھر کیوں رکھا تھا؟ جان بوجھ کر باغ ابن قاسم کے نقشے اور ریکاڑد گھر میں چھپایا گیا تھا۔ہمیں شبہ ہے کہ انہوں نے مزید ریکارڈ بھی چْھپا رکھا ہے۔ دلائل سننے کے بعد احتساب عدالت نے لیاقت قائم خانی کے مزید جسمانی ریمانڈ کی استدعا مسترد کرتے ہوئے لیاقت قائم خانی کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا۔
واضح رہے سابق ڈی جی پارکس لیاقت قائم خانی کو نیب راولپنڈی نے کراچی سے گرفتار کیا تھا، ملزم پر غیر قانونی الاٹمنٹ اور کروڑوں کے غیر قانونی اثاثے بنانے کا الزام ہے۔ ملزم کے گھر اورتجوریوں سےزیورات،زمینوں کےکاغذات اور قیمتی سامان برآمدہوا جبکہ نیب ملزم کی پُرتعیش گاڑیاں اور قیمتی اسلحہ بھی تحویل میں لے چکا ہے جبکہ لیاقت قائم خانی کے اثاثوں کی مالیت کا تخمیہ دس ارب روپے تک پہنچ گیا تھا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.